بنام چیف جسٹس سپریم کورٹ آف پاکستان

بنام چیف جسٹس سپریم کورٹ آف پاکستان
September 17 23:30 2019 Print This Article

ججناب چیف جسٹس صاحب ! سپریم کورٹ آف پاکستان کو بہت شوق تھا وکلا سے اچھا Stuff اوپر آئے۔ سپریم کورٹ نے HEC کو حکم دیا کہ ایل ایل بی کی ڈگری کے بعد GAT پاس کئے بنا بار کونسل سے لائسنس حاصل نہیں کیا جاسکتا۔ HEC میں بیٹھے ….. نے GAT کا جو پیپر بنایا ھے اس دفعہ معذرت کے ساتھ عرض ھے کہ وہ پیپر کمرہ امتحان میں بیٹھ کے آپکی سپریم کورٹ اور ہائی کورٹ کے ججز سے لیا جائے تو آپکے آدھے معزز جج صاحبان اس امتحان کو پاس نہیں کرسکیں گے۔ یہی پیپر ڈسٹرکٹ جوڈیشری سے کمرہ امتحان میں بٹھا کے حل کروائیں اور نگران نوجوان وکلا کو مقرر کریں تو آپکی 90 فیصد ڈسٹرکٹ جوڈیشری کو گھر جانا پڑے گا۔ خدا کے لئے بس کردیں اب یہ تجربات کرنا۔ آپ لندن سے پڑھ کے آئے ہیں کئی کتابوں کے مصنف ہیں براہ مہربانی بتائیں گے کہ کہاں کہاں آپکو GAT جیسے ٹیسٹ دینے پڑے ؟ ڈاکٹر MBBS کرکے PMDC سے رجسٹریشن کے لئے صرف فیس بھریں۔۔۔ انجنیئرز اپنی ڈگری مکمل کرکے صرف نام کی انٹرن شپ کریں اور پاکستان انجنیئرنگ کونسل سے سرٹفیکئشن لے لیں۔ موت پڑی ھے تو صرف وکلا کو۔ معذرت کے ساتھ عرض آپ سمیت پوری جوڈیشری، پولیس، میڈیا سب کو غصہ صرف وکلا پر آتا ھے۔

یہ نوجوان جو ایل ایل بی کرچکے ہیں HEC  GAT کی بھینٹ چڑھ رھے ہیں ایک صرف ایک وکیل اگر ایل ایل بی کی ڈگری لیکر GAT کیوجہ سے وکالت سے محروم ھوگیا تو اسکے 16 سالہ تعلیمی کیریئر کی تباھی کی ذمہ داری آپ پر ھوگی۔ وکیل تو کیا میرا ایمان ھے خدا بھی آپکو معاف نہیں کرے گا۔

سر ! بطور چیف جسٹس آپکی سروس کے 5 ماہ بچ گئے ہیں جانے سے پہلے خدا کے لئے نوجوان وکلا کے سر سے GAT کا یہ عذاب ختم کرتے جائیں۔ ورنہ 3 چانسز کے بعد رہ جانے والے ہر وکیل کی بربادی کے ذمہ دار آپ اور آپکی سپریم کورٹ ھوگی۔ میں ہاتھ جوڑ کے اپنے آنیوالے بچوں کے مستقبل کے لئے آپ سے بھیک مانگتا ھوں۔ اگر آپ یہ بھیک نہیں دے سکتے تو پھر اپنے ججز کے لئے بھی اس امتحان کی شرط رکھ دیں لیکن شرط یہ ھے کہ ججز کے لئے یہ پیپر مجھ جیسا کوئی جاہل وکیل بنائے اور مجھ جیسے سر پھرے وکیل امتحانی نگران اور پیپر مارکنگ کریں تاکہ جوڈیشری میں بھی اچھا Stuff

آ سکے۔

: مُبشر اقبال چوھان

ایڈووکیٹ ھائی کورٹ

لیگل لیکچرار

Print this entry

Comments

comments

  Categories: