تقافتی میلا الحمرا ہال جھوم اٹھا فنکاروں کی شاندار پرفارمنس

by usman bekhabar | July 24, 2019 4:33 pm

(للا ہور 24جولائی 2019۔راحت ملکیرا)محکمۂ اطلاعات و ثقافت کے زیراہتمام کلر آف پنجاب الحمرا کونسل میں دو روزه ڈیره غازی
خان کلچرشو کا انعقاد ہوا  کلچرل شو میں سرائیکی وسیب ،بلوچی طرز زندگی ،علاقائی  رقص لوک گیت اور بولیاں پیش کیں گیں
پنتالیس رکنی طائفہ نے کلچرل شومیں دلکش پرفارمنس کا مظاۂره کیا کلچرل شو میں ،علاقائی  موسیقی جھومر اور تلوار ڈانس نے
حاضرین سے ڈھیروں داد وصول کی ایگزیکٹو ڈایئریکٹرالحمرا اطہر علی خان نے اداکاروں ،فنکاروں اور موسیکاروں کو دل
کھول کر داد دی ڈیره غازی خان کی ثقافت پرانی ہے اس علاقے میں ﺫیاده تر سراۂیکی زبان اور اردگرد کچھ علاقوں میں
بلوچی بولی جاتی ہے 

تہذیب  اور ثقافت کو انسانی زندگی کا بنیادی پہلو سمجھتے ۂیں تقافت کیسی بھی قوم اور علاقائی رہن سہن  اور رسوم و رواج کا
امتزاج ہوتی ۂے تقافت اپنے خطے کا ایک مکمل آئینہ ہوتی ۂے مزید براں یۂ ایک خطے کی خصوصی شناخت بھی ثابت ۂوتی
ۂے ڈیره غازی خان کی ثقافت کو پورے ملک میں نمایاں حثیت حاصل ۂے اسکی انفرادیت اس بات میں پوشیدہ  ہے  کۂ اسکی کی
جعرافیائی حدود ملک کے چاروں صوبوں سے ملتی ۂے یۂ خود تو پنجاب میں پھلی پھولی ۂے مگر مغرب میں بلوچستان ،جنوب
میں سندھ ،اور شمال میں موجود خیبرپختو نخوا کی ثقافتوں نےاس پر گہرا رنگ چھوڑ ۂے ڈیره غازی خان کے لوگوں کا پۂناوا
بلوچستان سے مستعار کرده ۂے انکی خوراک پنجاب کے ﺫاۂقوں سے ملتی ۂے جبکۂ انکے جزبات پختونوں سے ملتے ہیں  انکی
زبان اور لۂجۂ سندھ کی مٹھاس لیے ۂے۔

ایسے کلچرل شو کروانے سے صوبائی یکجہتی  کا پہلو عیاں ہوتا ہے  ،اسکی اہمیت کا انداز ه اس بات سے لگایا جا سکتا ہے کۂ
وزیراعلی پنجاب نے خود شرکت کی اور تمام حاضرین اور ایونٹ مینجمنٹ کا شکریۂ ادا کیا ایسے ایونٹ اگر علاقائی سطح پر
کرواے جاۂیں تو آنے والی نسلیں اپنے تقافتی ورثۂ کو ہمیشہ   کے لیے ساتھ لے کر چلیں گے۔ 

وہاں  پر طرح طرح کے سٹالز لگاے گے تھے جس میں مختلف طرح کی چیزیں لگاۂی گیں تھیں جو حقیقی ثقافتی رنگ پیش کر
رہی  تھیں لوگوں کی دلچسپی بڑی دیدنی تھی سٹالز  سے شرکا نے وۂاں سے اپنی پسند کی چیزیں خریدیں اجرک ٹوپیاں جیکٹیں
جوتیاں کھسے اور روزمره کے استعمال کی چیزیں شامل تھیں بچوں نے اس میں سب سے ﺫیاده دلچسپی دیکھاۂی انتظامات کی اگر
بات کی جاے تو بۂترین رہے کیسی قسم کی بدنظمی دیکھنے کو  ملی

اگر ہم  بات کریں لوگوں پر اسکا کتنا اثر پڑے گاۂیں اس بات سے اندازه کر لیں کۂ پۂلے دن بھی  شرکا   کی تعداد
کافی رہی اور دوسرے دن بھی لوگ فیملیوں بچوں کے ساتھ شریک ۂوے جس سے کلچرل شو کی رونقیں اور بڑھ گیں اگر اسی طرح کے ایونٹ
ۂر ماه بعد ۂوتے رۂے تو ۂم اپنی تمام تقافتیں دوباره زنده کر سکتے ۂیں جس طرح سندھ موہن  جوداڑو چترال اور چولستان کی تقافت
سب سے نمایاں  حثیت رکھتی ہیں 

Comments

comments

Source URL: http://urdu.educationist.com.pk/?p=3007