قمری کیلنڈر بنانے کے لیے کمیٹی تشکیل

قمری کیلنڈر بنانے کے لیے کمیٹی تشکیل
May 09 02:47 2019 Print This Article

 

لاہور (رپورٹ عثمان بے خبر) ۔پاکستان کی تاریخ میں پہلی   مرتبہ اضابطہ اسلامی کیلنڈر بنانے کوشش  کی گئی ہے جس میں عید الفطر ِ، عید الاضحی ، رمضان اور محرم کے چاند کی اگلے پانچ سال    کی تاریخوں کا تعین کرنے کے لیے   کمیٹی بنا دی گئی ہے ۔تفصیلات کے مطابق وزیر سائنس و ٹیکنالوجی فواد حسن نے  قمری مہینوں کی تاریخوں کا تعین کے لیے کمیٹی کی منظوری دے دی ہے ۔کمیٹی پانچ ارکان پر مشتمل ہے جس میں    مشیر سائنس و ٹیکنالوجی ڈاکٹر طارق مسعود ،وقار احمد لیکچرار میٹرولوجی   کامسیٹس  یونیورسٹی اسلام آباد ،  ڈپٹی ڈائریکٹر میٹرولوجی  ڈیپارٹمنٹ ندیم فیصل ،ابو نسان ڈپٹی ڈائریکٹر  میٹرولوجی  اور ڈی سی ایم سپارکو غلام مرتضی   شامل ہیں ۔ وفاقی وزیر فواد چودھری  نے کہاکہ  ہم 15 دِن میں قمری کیلنڈر عوام اور کابینہ کے سامنے پیش کریں گے۔واضح رہے کہ وفاقی وزیر فواد چودھری نے اپنے ایک بیان میں  رویتِ ہلال کمیٹی پر تنقید کرتے ہوئے کہا تھا کہ علماءکا احترام ہے لیکن پوری دُنیا میں چاند دیکھنے کے معاملات رضا کارانہ بنیادوں پر ہوتے ہیں، عید اور رمضان کے چاند دیکھنے پر 40 لاکھ خرچ کر دینا کہاں کی عقلمندی ہے۔ انہوں  نے  رویت ہلال کے لئے کمیٹی قائم کرنے کے حوالے سے رائے دی ہے ہر کسی کا اس سے متفق ہونا ضروری نہیں۔ کم ازکم چاند دیکھنے کا تو معاوضہ نہیں ہونا چاہیے، پوری دنیا میں ایسے معاملات رضا کارانہ ہوتے ہیں، رویت ہلال کمیٹی کے ممبران چاند تو رضاکارانہ دیکھ لیا کریں، چاند دیکھنے پر قومی خزانے سے بھاری رقم خرچ ہو رہی ہے۔فواد چودھری نے کہا تھا کہ پڑھے لکھے علما ءکرام میری تجویز کی حمایت کر رہے ہیں، چاند دیکھنے کے لئے سائنس اینڈ ٹیکنالوجی سے فائدہ اٹھانا چاہیے۔ 10 سال کا کیلنڈر بن جائے گا تو غیر ضروری اخراجات اور تنازعات سے بچ جائیں گے۔یہ مسئلہ کافی توجہ طلب رہا ہے کہ چاند کی تاریخوں کا  تعین  کرنے کے لیے کوئی مناسب   طریقہ کار نا ہونے کی وجہ سے عوام الجھن کا شکار رہتی تھی کہ کہیں چاند نظر آگیا اور کہیں نہیں، مختلف روایات کی وجہ سے ایک ہی ملک میں دو عیدیں  منائی جاتیں ہیں اور اس دفعہ بھی مفتی پوپلزئی نے خیبر پختوانخواہ  میں ایک روز قبل ہی رمضان کا چاند نظر آنے کا اعلان کر دیا ہے ۔  سعودی عرب ، ملائیشیا اور گلف    اسلامی ممالک پہلے ہی چاند کمیٹی کی تشکیل دے کر ان  تاریخوں کے تنازعات سے نکل چکے ہیں  اور چاند کی تاریخوں کا تعین  کیلنڈر کمیٹی ہی کرتی ہیں ۔

Print this entry

Comments

comments

  Categories: