بہالپور استاد قتل واقعہ ،اساتذہ کا سخت ترین سزا کا مطالبہ

 بہالپور استاد قتل واقعہ ،اساتذہ کا سخت ترین سزا کا مطالبہ
March 21 11:29 2019 Print This Article

 

مقتول

لاہور   (دی ایجوکیشنسٹ  21 مارچ  2019 ۔عثمان بے خبر ) گورنمنٹ صادق ایجرٹن کالج   کے طالب علم خطیب حسین نے مخلوط پارٹی کے اعلان پر پروفیسر خالد حمید کو خنجر کے وار کر کے قتل کر دیا تھا۔ اساتذہ نےملزم کو سخت سے سخت سزا دینے کا مطالبہ کیا ہے۔ تفصیلات کے مطابق  بی ایس   انگریزی سمسٹر پانچ کے طالب علم خطیب حسین نے  اپنے ہی شعبہ کے پروفیسر خالد حمید کو مخلوط پارٹی کے اعلان پر یہ کہ کر قتل کر دیا کہ مخلوط پارٹی  منانا غیر اسلامی ہے ۔ملزم نے خنجر کے پے درپے   وار کیے  شور شرابے پر کالج کے دیگر اساتذہ ، طالب علم اور دیگر عملہ اکھٹےہو گئے  چھری کا وار کرنے والا خطیب حسین موقع پر کھڑا رہا جس کو قابو کر لیا گیا فوری طور پر متعلقہ  پولیس کو اطلاع دی گئی ،پولیس نے موقع پر پہنچ کر ملزم کو  آلہ قتل سمیت گرفتار کرلیا ۔پروفیسر خالد حمید کو فوری طور پر بہاولپور وکٹوریہ اسپتال منتقل کر دیا گیا جہاں ڈاکٹروں نے ان کی موت کی تصدیق کر دی اور لاش پوسٹ مارٹم کے لیے دے دی گئی ۔ ضلعی پولیس ترجمان عمر سلیم نے بتایا کہ ابھی تک قتل کی وجوہات سامنے آنا باقی ہیں ۔بیٹے کی مدعیت میں مقدمہ درج کر لیا گیا ہے ۔ولید خان جوقتل کے وقت  اپنے والد کے ساتھ تھااس نے بتایا کہ ملزم پروفیسر کے انتظار میں تھا جیسے ہی میرے والد  آفس میں داخل ہوئے اس  نے خنجر سے سر اور معدہ پر وار کیے  اور ملزم نے  یہ چلانا شروع کر دیا کہ میں نے قتل کر دیا ۔اس واردات کے فوراً بعد کالج کو بندکر دیا گیا ،اساتذہ نے احتجاجی مظاہرہ کیا اور ملزم کو سخت سے سخت سزا دینے کا مطالبہ کیا ۔اس واقعے کی رپورٹ وزیر اعلی نے طلب کر لی ہے، اور کہا ہے کہ مقتول کے اہل خانہ کو انصاف کی فراہمی ہر صورت ممکن بنائی جائے ۔

Print this entry

Comments

comments

  Categories: