ملک بڑی دس جامعات کو عالمی یونیورسٹیز کے مقابل لانے کا منصوبہ۔

ملک بڑی دس جامعات کو عالمی یونیورسٹیز کے مقابل لانے کا منصوبہ۔
March 15 20:30 2019 Print This Article

لاہور(دی ایجوکیشنسٹ۔ 15 مارچ 2019عثمان بے خبر )۔وفاقی حکومت نے ملک کی دس بڑی جامعات کو دنیا کی بہترین یونیورسٹیز کے برابر لانے کا منصوبہ وزارت سائنس و ٹیکنالوجی کو سونپ دیا ہے ۔اس حوالے ایک ٹاسک فورس بھی تشکیل دی گئی ہے ،جو اپنی سفارشات  مرتب  کر کے  رواں ماہ کے آخر تک حکومت کو پیش کرے ۔تفصیلات کے مطابق ماضی میں بھی ہائیر ایجوکیشن کمیشن کی جانب سے جامعات کی درجہ بندی کی جاتی رہی ، مگر کئی برسوں سے یہ منصوبہ التوا کا شکار تھا اور 2018 ء میں ملکی جامعات کے  درجہ بندی کے اس منصوبے کو یکسر  ہی ختم کر دیا گیا ۔اب مقامی حکومت کے دنیا کی ٹاپ یونیورسٹیز میں پاکستان کو شامل کرنے کے لیے تین جامعات کا انتخاب کیا ہے، جس میں نسٹ ،کامسیٹس اور قائد اعظم   یونیورسٹی شامل ہیں ۔

ملکی جامعات کو عالمی درجہ بندی میں لانا خواہش تو اچھی ہے مگر اس کے تقاضوں کو بھی سمجھ لینا ہوگا ۔اس کے لیے  جامعات  میں درس و تدریس،تحقیق اور دیگر سہولیات کا معیا ر بلند کرنا سب سے پہلی ترجیح  ہونا چاہیے ۔ہمیں سب سے پہلے ان مسائل کا ادراک کرنے کی ضرورت ہے جو ہماری جامعات کے لیے سب سے بڑی رکاوٹ ہیں ۔ہمارے ہاں اعلی سطح پر تعلیم وتحقیق کا کوئی ادارہ موثر  کام نہیں کرتانہ ہی جامعات میں  کوالٹی کنٹرول کا کوئی مستند نظام موجود ہے۔

یہی بڑا مسئلہ ہے جس کے حل کی تلاش کی ضرورت ہے ۔

Print this entry

Comments

comments

  Categories: