گلگت بلتستان پر بہترین کتاب لکھنے پر ڈاکٹر شفیق جالندھری کو خراج تحسین پیش کرتا ہوں۔ وزیراعلٰی خیبر پختونخواہ

گلگت بلتستان پر بہترین کتاب لکھنے پر ڈاکٹر شفیق جالندھری کو خراج تحسین پیش کرتا ہوں۔ وزیراعلٰی خیبر پختونخواہ
March 31 20:13 2018 Print This Article

تقریب میں سینئر صحافی ڈاکٹر مجاہد منصوری، سجاد میر، ظہیراحمد بابر، ڈاکٹر نوشینہ سلیم، ترجمان پی ٹی آئی فواد چوہدری، جاوید نواز سمیت کالم نگاروں اور صحافیوں اور طلبہ کی بڑی تعداد نے شرکت کی

لاہور(31مارچ، ہفتہ): وزیر اعلیٰ خیبر پختونخواہ پرویز خٹک نے کہا ہے کہ گلگت بلتستان جیسے حسین علاقے کو ماضی میں نظر انداز کیا جا تا رہا ہے جس کی خوبصورتی کو اجاگر کرنے کیلئے بہترین کتاب لکھنے پر پروفیسر ڈاکٹر شفیق جالندھری کو خراج تحسین پیش کرتا ہوں ۔ گلگت بلتستان کی عوام انتہائی مہذب اور تعلیم یافتہ ہے جہاں کرائم ریٹ صفر ہے جو ایک اعزاز کی بات ہے ۔ وہ قائد اعظم لائبریری میں پنجاب پبلک لائبریریز اور مولانا ظفر علی خان ٹرسٹ کے اشتراک سے منعقدہ معروف سینئر صحافی ، دانشور اور استاد پروفیسر ڈاکٹر شفیق جالندھری کی کتاب ’’ حسین ترین پاکستان ؛گلگت بلتستان‘‘ کی تقریب رونمائی سے خطاب کر رہے تھے۔ اس موقع پر ڈائریکٹرجنرل پنجاب پبلک لائبریریز ڈاکٹر ظہیراحمد بابر، معروف سینئر تجزیہ کار ڈاکٹر مجاہد علی منصوری، سجاد میر، رؤف طاہر،راجا اسد علی خان، ڈاکٹر نوشینہ سلیم،ایڈیٹر دی ایجوکیشنسٹ شبیر سرور، ترجمان پی ٹی آئی فواد چوہدری، جاوید نواز سمیت کالم نگاروں اور صحافیوں اور طلبہ کی بڑی تعداد نے شرکت کی۔ تقریب سے خطاب کرتے ہوئے پرویز خٹک نے کہا کہ گلگت بلتستان پاکستان کے حسین ترین مقامات میں ہے جس میں سی پیک منصوبے کے آغاز کے بعد ترقی کے نئے دروازے کھل گئے ہیں۔

انہوں نے کہا کہ کئی سیاستدان صرف دکھاوے کے لئے کام کرتے ہیں اور عام آدمی کو بنیادی سہولیات فراہم کرنے کی جانب کوئی توجہ نہیں دیتا۔ پاکستان ہم سب کا ہے اور اس کی ترقی کیلئے ہمیں مل کر کام کرنا ہوگا۔ انہوں نے کہا کہ تعلیم کی ترقی کے بغیر کوئی ملک ترقی نہیں کر سکتا اس لئے ملک میں یکساں نظام تعلیم کی ضرورت ہے تاکہ غریب کا بچہ بھی بہترین مستقبل بنا سکے۔ انہوں نے بہترین تقریب کے انعقاد پر منتظمین کو مبارک باد پیش کی ۔ ڈاکٹر ظہیر احمد بابر نے کہا کہ سماج میں بہتری کے لئے لائبریریوں کا استعمال ضروری ہے جس کیلئے ڈاکٹر شفیق جالندھری کی تصنیف اچھا اضافہ ثابت ہوگی۔انہوں نے کہاکہ ڈاکٹر شفیق جالندھری دوسروں کے ساتھ ہمیشہ اپنے نام کی طرح شفقت سے پیش آئے یہی وجہ ہے کہ جو آج میڈیا انڈسٹری کے ہر شعبہ میں ان کے شاگر دخدمات انجام دیتے نظر آتے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ ڈاکٹر شفیق کے سفر نامے کسی حسینہ کے ذکر کے بغیر بھی بہت خوبصورت ہوتے ہیں۔

مجاہد منصوری نے کہا کہ ڈاکٹر شفیق جالندھری ایک استاد اور محقق ہیں جن کی کتاب ایک سوشیالوجسٹ کے مشاہدہ کی شعوری کوشش کا نتیجہ ہے۔انہوں نے کہاکہ پاکستان بہت حسین اور عظیم ملک ہے لیکن اس کی عظمت کچلی گئی ہے لیکن اب کے پی کے میں حالات بدل رہے ہیں۔ جس میں امن و عامہ، صحت اور تعلیم جیسی بنیادی ضروریات شامل ہیں ۔صوبہ خیبر پختونخواہ میں بہتراقدامات اٹھائے جا رہے ہیں لیکن اُنھیں تشہیر کرنا نہیں آتی۔ انہوں نے مطالبہ کیا کہ بلین ٹری منصوبے کی حقیقی اور مکمل تصویر سامنے آنی چاہیے۔سجاد میر نے کہا کہ ڈاکٹر شفیق جالندھری ایک مہربان اور نفیس شخص ہیں جنہوں نے اکیڈمک انداز میں پرکھتے ہوئے صحافتی نظریات پر مبنی بہترین تصنیف ہے جو منفرد آرٹ ہے۔ انہوں نے کہا کہ گلگت بلتستان کے لوگ بہت محنتی، ایماندار اور جفاکش ہیں جن کو سمجھنے میں یہ کتاب معاونت فراہم کرے گی۔

انہوں نے کہا کہ صحافیوں کا کام سیاست کرنا نہیں بلکہ معاشرے کی درست عکاسی کرنا ہے۔ فواد چوہدری نے کہا کہ ڈاکٹر شفیق جالندھری نے اپنی کتاب میں گلگت بلتستان کا ذکر بہت اچھے انداز میں کیا ہے جس کے لئے وہ مبارک باد کے مستحق ہیں۔ انہوں نے کہا کہ دنیا کی آٹھ بڑی چوٹیوں میں سے پانچ کا گلگت بلتستان میں ہونا کسی اعزاز سے کم نہیں۔ انہوں نے کہا کہ گلگت بلتستان سیاحت کی بڑی انڈسٹری ہے اور ڈاکٹر شفیق کا سفر نامہ انہی وادیوں میں لے جاتا ہے۔ انہوں نے کہا کہ سی پیک منصوبے کے بعد گلگت بلتستان معاشی حب بنتا جا رہا ہے ۔ جاوید نوازنے کہا کہ دنیا میں کئی افراد سفر کرتے ہیں لیکن بہت کم لوگ اس علاقے کا حقیقی احوال تحریری صورت میں پیش کرتے ہیں جیسا شفیق جالندھری نے اپنی کتاب میں کیا ہے۔ انہوں نے کہا کہ ڈاکٹر شفیق جالندھری کی کتاب کا ترجمہ انگریزی و دیگر زبانوں میں کیا جانا چاہیے۔ ڈاکٹر نوشینہ سلیم نے ڈاکٹر شفیق جالندھری کو بہترین تصنیف لکھنے پر مبارک باد پیش کرتے ہوئے کہا کہ انہوں نے ہمیشہ اپنی کتب میں الفاظ کا چناؤ اچھا رکھا۔ ڈاکٹر شفیق جالندھری نے کہا کہ معزز مہمانوں ، شرکاء اور منتظمین کا شکریہ ادا کرتے ہوئے کہا کہ کتاب پڑھنے والوں کو خوب محظوظ کرے گی۔

Print this entry

Comments

comments