رومانیہ کے سفیرکایوایم ٹی کادورہ

رومانیہ کے سفیرکایوایم ٹی کادورہ
December 12 03:29 2017 Print This Article

لاہور ( سٹاف رپورٹ ) رومانیہ اس وقت پاکستان میں متعدد شعبوں میں سرمایہ کاری کر رہا ہے جن میں انفراسٹرکچر نمایاں ہے۔ پاکستان محبت کرنے والوں کا ملک ہے اور پاکستان کے لوگ خوش دل، مہمان نواز اور دوسروں کا خیال رکھنے والے ہیں۔ رومانیہ اور پاکستان کے مابین سفارتی تعلقات کی بنیاد 1964 میں رکھ دی گئی تھی اور تب سے رومانیہ ان تعلقات کو مزید مستحکم کے لیے کو شاں ہے۔ رومانیہ یورپین یونین کی ساتویں بڑی مارکیٹ ہے اور یہ یورپ میں جانے کے لیے گیٹ وے ہے جس کا فائدہ پاکستان اور دیگر ممالک کو اٹھانا چاہییے۔ ان خیالا ت کا اظہار رو ما نیہ کے سفیر ر نکولا گوا نے یو نیورسٹی آف مینجمنٹ اینڈ ٹیکنالوجی میں اپنے اعزاز میں منعقدہ تقریب سے خطا ب کر تے ہو ئے کیا۔ انکا مزید کہناتھا کہ رومانیہ تیزی کے ساتھ ترقی کرتی ہوئی معیشت ہے جس کے باعث پاکستان اور رومانیہ کے تعلقات مزید گہرے ہوسکتے ہیں ۔تعلیمی شعبے میں سرمایہ کاری کے حوا لے سے ان کے ملک کو پاکستان کے تعلیمی شعبے میں خاص طور پر دلچسپی ہے۔ یوایم ٹی جیسے ادارے پاکستان کے مثبت شناخت ہیں جو کہ اعلیٰ تعلیم اور ریسرچ کے فروغ میں اہم کردار اداکررہے ہیں۔ بہترین تعلیمی اداروں کا اپنے ملک کی یونیورسٹیز کے ساتھ اشتراک بھی کر وایا جا ئے گا۔ ۔انہوں نے مزید کہا کہ اس وقت رومانیہ میں پچاس ہزار سے زائد مسلمان آباد ہیں جن کو اسلام فوبیا جیسے مسائل کا بالکل بھی سامنا نہیں کیونکہ ہم ہر طرح کی مذہبی آزادی پر یقین رکھتے ہیں۔ یورپین یونین اور نیٹو کا ممبر ہونے کے ناطے رومانیہ پاکستان اور نیٹو کے تعلقات مضبوط کرنے میں اپنا کردار ادا کرے گا۔ تقر یب سے خطاب کر تے ہو ئے ریکٹر یوایم ٹی ڈاکٹر محمد اسلم نے ایمبیسڈر نکولا گوا کو یوایم ٹی آنے پر خوش آمدید کہا اور رومانیہ اور پاکستان کے مابین سفارتی تعلقات کو فروغ دینے پر سراہا۔ رومانیہ اور پاکستان کے مابین اچھے تعلقات قائم ہیں جو کہ مزید بہتر اور مضبوط ہوسکتے ہیں۔ یوایم ٹی رومانیہ کی یونیورسٹیز کے ساتھ اشتراک کرکے ان کی ریسرچ اور تجربوں سے فائدہ اٹھائے گی۔آخر میں معزز مہمان کو سوینئر بھی پیش کیا گیا۔ تقر یب میں ڈائریکٹر جنرل عابد ایچ کے شیروانی سمیت رومانیہ کی ایمبیسی سے ڈپلومیٹس اور طلبہ نے شرکت کی۔

Print this entry

Comments

comments