چائنہ پاکستان اکنامک کاریڈور کامیابی سے ہمکنار ہو گا ہمسایہ ممالک ترقی سے گھبرا گئے۔ سید رضا علی گیلانی

چائنہ پاکستان اکنامک کاریڈور کامیابی سے ہمکنار ہو گا ہمسایہ ممالک ترقی سے گھبرا گئے۔ سید رضا علی گیلانی
November 22 16:43 2017 Print This Article

پنجاب یونیورسٹی سنٹر فار کول ٹیکنالوجی 182 ملین روپے کے بین الاقوامی معیارکی لیبارٹریز اور دیگر انفراسٹرکچر کے توسیعی منصوبے کا افتتاح۔ 
لاہور(سٹاف رپورٹ) دہشت گردی کا اسلام اور دہشت گردوں کا پاکستان سے کوئی تعلق نہیں ہے۔ پاکستان اب ٹیک آف کرنے کی پوزیشن پر پہنچ چکا ہے اور حکومت نے عوام سے کئے گئے اپنے وعدے کے مطابق توانائی بحران پر قابو پا لیا ہے جس کا 2013 میں سامنا تھا۔ بدقسمتی سے ہم اپنی صلاحیتوں سے آگاہ نہیں ہیں اور ہمیں دوسروں کی حوصلہ افزائی کرنی چاہئے جو اچھا کام کر رہے ہیں۔ پاکستان نے مختصر عرصے میں بہت ترقی کر لی ہے اور چائنہ پاکستان اکنامک کاریڈور کامیابی سے ہمکنار ہو گا۔ چند ہمسایہ ممالک ہماری ترقی سے گھبرا گئے ہیں۔ ان خیالات کا اظہار صوبائی صوبائی وزیر برائے ہائر ایجوکیشن سید رضا علی گیلانی نے پنجاب یونیورسٹی سنٹر فار کول ٹیکنالوجی میں کوئلے، توانائی اور ماحولیاتی انجینئرنگ میں تحقیق کے لئے بین الاقوامی معیارکی لیبارٹریز اور دیگر انفراسٹرکچر پر مبنی 182 ملین روپے کے توسیعی منصوبے کا افتتاح کر نے کے بعد تقریب سے خطاب کر تے ہو ئے کیا۔ طلباء کو نصیحت کر تے ہو ئے کہا کہ وہ مایوس نہ ہوں کیونکہ ان میں بے پناہ صلاحیتیں ہیں ااور ہم ہی وہ لوگ ہیں جو پاکستان کو آگے لے کر جائیں گے ۔ طلباء و طالبات اپنے اپنے شعبوں میں کامیابیاں حاصل کر کے پاکستان کی خدمت کریں ۔اس موقع پر انہوں نے سنٹر فار کول ٹیکنالوجی کے اساتذہ کے لئے اعزازیے کا بھی اعلان کیا۔ انہوں نے کہا کہ ایسی سہولیات دیگر یونیورسٹیوں میں بھی فراہم کی جائیں گی۔

اپنے خطاب میں چیئرمین پنجاب ہائر ایجوکیشن کمیشن ڈاکٹر نظام الدین نے جدید لیبارٹریوں کی تعریف کرتے ہوئے کہا کہ یونیورسٹیوں میں اس طرح کے با معنی تحقیقی ادارے بہت کم ہیں۔ ہمیں انٹریپنورشپ کو فروغ دینا چاہئے اور اور انڈسٹری کے ساتھ روابط بڑھانے چاہئیں۔ پنجاب ہائر ایجوکیشن کمیشن ایسے پروگرامز ، سیمینار اور کانفرنسز کی فنڈنگ کرے گا۔ تقریب سے خطاب کرتے ہوئے وائس چانسلر ڈاکٹر ظفر معین ناصر نے پنجاب یونیورسٹی کے تحقیقی منصوبوں پر سپورٹ کرنے پر شکریہ ادا کر تے ہو ئے کہا کہ پنجاب یونیورسٹی کے سائنسدانوں نے کپاس کا جو منفرد بیج ایجاد کیا اس میں بھی صوبائی وزیر نے خصوصی دلچسپی لی اور ان کا تعاون حاصل رہا۔ پنجاب یونیورسٹی میں جلد ہی سائنس میلے کا انعقاد کیا جائے گا۔ 182 ملین روپے کی لاگت سے مکمل ہونے والا یہ منصوبہ سات جدید ترین ریسرچ لیبارٹریوں، چار کلاس رومز، کانفرنس روم، پی ایچ ڈی کلسٹر روم، اساتذہ کے دفاتر اور کمپیوٹر لیب پر مشتمل ہے جس میں بین الاقوامی معیار کی تحقیق کی جائے گی۔ افتتاحی تقریب میں چیئرمین پنجاب ہائر ایجوکیشن کمیشن پروفیسر ڈاکٹر نظام الدین، وائس چانسلر پنجاب یونیورسٹی ڈاکٹر ظفر معین ناصر، چیئرمین پنجاب کریکلم اینڈ ٹیکسٹ بک بورڈ لیفٹننٹ جنرل ریٹائرڈ محمد اکرم، یونیورسٹی آف سرگودھا کے سابق وائس چانسلر پروفیسر ڈاکٹر محمد اکرم چوہدری، ممبر پنجاب اسمبلی وچیئرمین پنجاب ایجوکیشن فاوٗنڈیشن قمر الاسلام راجہ، ممبر پنجاب اسمبلی ڈاکٹر فرزانہ چوہدری، ڈائریکٹر سنٹر فار کول ٹیکنالوجی پروفیسر ڈاکٹر شاہد منیر، فیکلٹی ممبران اور طلباء و طالبات اور میڈیا کے نما ئندوں کی بڑی تعداد نے شرکت کی ۔

Print this entry

Comments

comments