اساتذہ اختلافات بھلا کر تر قی کے لیے کام کر یں ۔ گورنر پنجاب

اساتذہ اختلافات بھلا کر تر قی کے لیے کام کر یں ۔ گورنر پنجاب
November 21 05:37 2017 Print This Article

 ملک میں جمہوریت، معیشت اورپارلیمنٹ مضبوط ہونے چاہیں۔ ملک رفیق رجوانہ کا پنجاب یونیورسٹی کانووکیشن میں خطاب

نصاب جدید خطوط پر استوار کر کے یونیورسٹی میں پر امن ماحول کو یقینی بنایا ہے۔ وا ئس چانسلر ڈاکٹر ظفر معین نا صر

جلسہ عطا ئے اسناد میں ماسٹرزکے 275اور بی ایس کے 176امیدواران کو ڈگریاں جبکہ انڈر گرایجوئیٹس کے81اور ایم اے /ایم ایس سی کے 119یعنی 148امیدواروں کو میڈلز دیئے گئے ،کل599ڈگریاں اور میڈلزتقسیم کئے گئے

ا لاہور ( رپورٹ ۔ علی ارشد) آزادی اظہار رائے میڈیا کا بنیادی حق ہے تاہم اپنے اس حق کے استعمال میں دوسروں کے بنیادی حقوق مجروح نہ کریں۔ سیاستدانون کو کشادہ نظری سے دیکھنا چا ہیے۔ پاکستان کی تمام سیاسی جما عتیں اور لیڈران محب وطن ہیں اور اختلاف را ئے ہو سکتا ہے لیکن ملک کی تر قی پر کو ئی اختلاف نہیں ہے۔ حکومتیں گرانے سے کو ئی ملک تر قی نہیں کر سکتا ۔ ملک میں جمہوریت، معیشت اورپارلیمنٹ مضبوط ہو اور ہر ادارہ اپنی آئینی حدود میں رہ کر کام کرے۔

ان خیالا ت کا اظہار گورنر پنجاب و چانسلر پنجاب یونیورسٹی ملک محمد رفیق رجوانہ نے یونیورسٹی کے 126 ویں سالانہ جلسہ عطا ئے اسناد کی تقریب سے خطاب کے دوران کیا۔ انہوں نے مزید کہا کہ معیار تعلیم میں بہتری سے پاکستان کی یونیورسٹیوں کی رینکنگ میں بہتری آئے گی اور اس سے ہماری ڈگریوں کی عزت بڑھے گی ۔ یونیورسٹیوں کے چانسلر ہونے کی حیثیت سے تعلیم کے معیار کو بہتر بنانے سے متعلق نہایت فکر مند رہتے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ پڑھے لکھے افراد کو سیاست میں بھی آئیں ملک کو باشعور سیاستدانوں کی بھی ضرورت ہے۔ امن عامہ کی صورتحاال طلبہ کے ہا تھ میں ہے جا معات کے اساتذہ تمام اختلافات بھلا کر ادارے کی تر قی کے لیے کام کر یں ۔ علم اور تعلیم میں فرق ہے اور موجودہ دور تحقیق ، ٹیکنالوجی اور سپیشلائزیشن کا دور ہے۔

طلباء وطالبات ہمارا حقیقی سرمایہ ہیں اور آپ کا اصل امتحان اب شروع ہو اہے اور اب آ پ نے ملک کی خدمت کرنی ہے۔ آپ ہمارا اور پاکستان کا مستقبل ہیں ۔ طا لبات کو نصیحت کر تے ہو ئے انکا کہنا تھا کہ طالبات کو گھر نہیں بیٹھنا چاہئے بلکہ عملی میدان میں آگے بڑھنا چاہئے کیونکہ اب امتیازی سلوک اور سوچ کا وہ دور نہیں رہا اور اب خواتین ہر شعبے میں آگے آرہی ہیں۔ تقریب سے خطاب کرتے ہوئے وائس چانسلر ڈاکٹر ظفر معین ناصر نے کہا کہ پنجاب یونیورسٹی کی عالمی رینکنگ کو بہتر بنانے کے لئے یونیورسٹی انتظامیہ نے مختلف اقدامات کرتے ہوئے تحقیق کے کلچر کو فروغ دیا ہے۔ انہوں نے کہا کہ انتظامیہ نے فیکلٹی آف ہیلتھ سائنسز کو بحال اور فعال کیا ہے۔ تعلیمی پروگراموں کا نصاب بھی جدید خطوط پر استوار کیا گیا ہے جبکہ یونیورسٹی میں پر امن ماحول کی فراہمی کو بھی یقینی بنایا گیا ہے۔

جلسہ عطا ئے اسناد میں ماسٹرزکے 275اور بی ایس کے 176امیدواران کو ڈگریاں جبکہ انڈر گرایجوئیٹس کے81اور ایم اے /ایم ایس سی کے 119یعنی 148امیدواروں کو میڈلز دیئے گئے ،کل599ڈگریاں اور میڈلزتقسیم کئے گئے جبکہ ماسٹرز کے 2014-16سیشن اور بی ایس کے 2012-16سیشن کے امیدواروں کو تقریب ڈگریوں اور میڈلز سے بھی نوازا گیا۔ تقریب میں وائس چانسلر پروفیسر ڈاکٹر ظفر معین ناصر ،میئر لاہور کرنل (ر) مبشرجاوید ، کنٹرولر امتحانات پروفیسر ڈاکٹر شاہد منیر، رجسٹرار ڈاکٹر محمد خالد خان، فیکلٹیوں کے ڈینز، شعبہ جات کے سربراہان، سینئر فیکلٹی و انتظامی عہدیداران ، طلباؤ طالبات اور ان کے والدین نے شرکت کی۔

Print this entry

Comments

comments