پنجاب یونیورسٹی میں اساتذہ کی عدم دستیابی اورمیڈیکل کالجز کے انٹری ٹیسٹ کی وجہ سے داخلے موخر

پنجاب یونیورسٹی میں اساتذہ کی عدم دستیابی اورمیڈیکل کالجز کے انٹری ٹیسٹ کی وجہ سے داخلے موخر
October 19 16:21 2017 Print This Article

1اے آرساجدسے

پنجاب یونیورسٹی نے اساتذہ کی عدم دستیابی اورمیڈیکل کالجزکے انٹری ٹیسٹ دوبارہ ہونے کی بنا پرتمام پروگراموں کے داخلے موخرکردئیے ہیں۔اس سلسلے میں ہیلتھ سائنسز ڈیپارٹمنٹ نے بھی اپنے داخلے موخرکردیئے ہیں۔پہلے داخلوں کااشتہارہیلتھ سائنسز ڈیپارٹمنٹ کی عمارت اوراساتذہ کی عدم موجودگی کے باوجوددے دیاگیاتھا جس میں انٹری ٹیسٹ کی تاریخ ۲۰اکتوبر جبکہ انٹرویوزکی تاریخ۲۴اور۲۵اکتوبررکھی گئی تھی۔میرٹ لسٹیں ۳۱اکتوبرجبکہ ۱۵ نومبرسے کلاسز کاآغازہوناتھا۔

اب یونیورسٹی انتظامیہ نے داخلوں کاعمل موخرکرنے کافیصلہ کیاہے۔نئے شیڈول کے مطابق ہیلتھ سائنسز ڈیپارٹمنٹ میں انٹری ٹیسٹ۲دسمبرکو،پہلی ،دوسری اورتیسری میرٹ لسٹیں بالترتیب ۱۵،۱۱اور۲۰اکتوبرکولگائی جائیں گی جبکہ کلاسزکاآغاریکم جنوری ۲۰۱۸کوہوگا۔

دلچسپ بات یہ ہے کہ ہیلتھ اورالائیڈہیلتھ سائنسزکے نئے ڈیپارٹمنٹ کی عمارت کی عدم موجودگی کے ساتھ ساتھ اساتذہ بھی موجودنہیں ہیں۔اگرچہ نئے اساتذہ کی تعیناتی کے لئے اشتہاردے دیاگیاہے  لیکن اس میں پروفیسراورایسوسی ایٹ پروفیسرکی اسامیاں موجودنہیں ہیں۔

یونیورسٹی ترجمان خرم شہزادکے مطابق سٹاف کی تعیناتی کا عمل شروع کردیاگیاہے۔سینئراساتذہ کوجزوقتی طورپربھی تعینات کیاجاسکتاہے ۔داخلوں کاشیڈول بھی دوبارہ جاری کیاگیاہے، نہ صرف میڈیکل اورالائیڈمیڈیکل بلکہ گریجوایشن کے داخلے بھی میڈیکل انٹری ٹیسٹ کی وجہ سے دوبارہ ہوں گے۔انہوں نے یہ بھی بتایاکہ جن طلبا نے فیس جمع کروادی ہے اگران کا داخلہ میڈیکل کالجزمیں ہوجاتاہے توان کومکمل فیس واپس کی جائے گی۔آخری میرٹ لسٹ میڈیکل کالجوں کے داخلوں کے بعدلگائی جائے گی تاکہ طلباکا حرج نہ ہو۔

 

Print this entry

Comments

comments