دی ایجوکیشنسٹ کا انٹری ٹیسٹ کے خلاف عدالت جانے کا اعلان

دی ایجوکیشنسٹ کا انٹری ٹیسٹ کے خلاف عدالت جانے کا اعلان
اکتوبر 11 11:56 2017 Print This Article

۱عدالت سے انٹری ٹیسٹ یکسرختم کرنے کی استدعاکی جائے گی

انٹری ٹیسٹ کے نام پر سات سال سے پسماندۃ علاقوں کے غریب ظلبا کا استحصال جاری ہے

انٹری ٹیسٹ کے انعقادکا اخلاقی اورقانونی جوازختم ہوچکا

ٹیسٹ طاقتور اکیڈمی مافیاکے مفادات کاتحفظ کررہاہے ، ہزاروں طلبا کامستقبل خطرے میں ہے۔

لاہور(اسدسلیم):ملک میں تعلیمی نظام کی بہتری کے لیئے کام کرنے والے ادارے “دی ایجوکیشنسٹ پاکستان” نے میڈیکل کالجوں کے انٹری ٹیسٹ کے دوبارہ انعقاد کے فیصلے کے خلاف عدالت سے رجوع کرنے کا اعلان کر دیا. اس بات کا اعلان جوائینٹ ایڈیٹر دی ایجوکیسٹ نے” نیوزاینڈویوز ” کے زیراہتممام انٹری ٹیسٹ لیک ہونےکے بعد پیداہونے والی صورتحال کے حوالےسے منعقد کیے گئے پروگرام میں کیا۔ انکا کہنا تھا کہ جس بنا پر انٹری ٹیسٹ کو شروع کیا گیا تھا؛ وہ جواز اخلاقی ظور پر اب ختم ہو چکا ہے۔ اب اس ٹیسٹ کا قانونی جواز بھی نہیں رہا.

1998 میں ٹیسٹ اس وجہ سے متعارف کروایا گیاتھا کہ تعلیمی بورڈز میں پرچوں کی چیکنگ میں طاقتور مافیا اپنے اثرورسوخ سے  اچھے نمبر لے کرمیڈیکل اورڈینٹل کالجوں میں داخلہ لے لیتاتھا۔ انٹری ٹیسٹ کے ذریعے ایسے طلبا کو روکا جائے گالیکن حالیہ انکشافات اور ایف آئی اے کی تحقیقات سے یہ بات سامنے آئی ہے کہ انٹری ٹیسٹ کے پرچے بھی اس گروہ نے پیسوں کے بل بوتے پر ٹیسٹ کے انعقاد سے قبل ہی حاصل کر لیئے ہیں اور یہ سلسلہ گزشتہ 7 سال سے جاری ہے.اب جبکہ ملوث افراد کے خلاف تحقیقات ابھی جاری ہیں اورہرروزنئے انکشافات سامنے آرہے ہیں اس لئے اس ٹیسٹ کو یکسرختم کیاجائے۔

 

Comments

comments