پنجاب ٹیکسٹ بک بورڈنےدرسی کتب سے پاکستانی ہیروزسے متعلقہ اسباق خارج کردئیے

پنجاب ٹیکسٹ بک بورڈنےدرسی کتب سے پاکستانی ہیروزسے متعلقہ اسباق خارج کردئیے
اگست 19 13:51 2017 Print This Article

علی ارشد

لاہور(علی ارشد سے) پنجاب ٹیکسٹ بک اینڈ کر یکولم بورڈ کی جانب سے پہلی سے پانچویں تک کی سرکاری کتب میں سے مقدس اسلامی مقاما ت، اولیاء کرام سے متعلق تحریریں، قا ئد اعظم اور علامہ اقبال کے مزارات کی تصاویر نصاب سے نکا ل کر بے مقصد اور کارٹون نما تصاویردرسی کتب میں شامل کر دی گئیں ہیں۔ تفصیلات کے مطابق پنجاب حکومت اور ٹیکسٹ بک بورڈ کی غفلت اور ملی بھگت سے قوم کے معماروں کو مقدس اسلامی معلومات اور قو می مشاہیر سے متعلق مضامین کو نکا ل دینے کی سا زش منظر عام پر آگئی۔ بابائے قوم قا ئد اعظم کی زندگی پر لکھے گئے سبق، مینار پاکستان، قو می پر چم، مسجد کی تعظیم ، اولیاء کرام کی زندگی اور اسلامی تعلیمات سے متعلقہ مضامین کو بھی نصاب سے نکال دیا گیاہے۔اس حوالے سے روزنامہ 92 سے بات کر تے ہوئے مینجنگ ڈائریکٹر پنجاب ٹیکسٹ بک اینڈ کر یکولم بورڈ عامر اعجاز نے بتا یا کہ ایسی کوئی تبدیلی نہیں کی گئی ہے۔ نصاب میں 2006 سے کوئی تبدیلی نہیں کی گئی جبکہ پہلی جماعت سے پا نچویں جماعت تک کی کتابیں4 سے 6 سال بعد تبدیل ہوتی رہتی ہیں لیکن ان میں بھی ایسی کوئی بھی تبدیلی نہیں کی گئی ۔ پرا ئمری سکول کی کتابیں 60 سے 70 تصاویر پر مشتمل ہوتی ہیں جن کو کم کیا گیا ہے اور یہ متفقہ فیصلہ ہے۔ شہداء سے متعلق مضامین کو تیسری جماعت سے تبدیل کر کے پا نچویں میں ڈالا گیا ہے جس سے بچے ان شہداء کی خدمات کو زیادہ بہتر انداز سے سمجھ سکیں گے۔ انہوں نے مزید بتا یا کہ یہ کتا بیں پچھلے سال شا ئع کی گئی ہیں جبکہ انکی تعیناتی کو ابھی صرف تین ماہ ہوئے ہیں ۔ مقدس اسلامی مقاما ت کی تصویروں کے نکالے جانے سے متعلق انہوں نے لا علمی کا اظہار کرتے ہوئے کہاکہ انہوں نے اس معاملے کی انکوائری کا حکم بھی دے دیاہے۔

Comments

comments