پنجاب ہائر ایجوکیشن کمیشن نے اساتذہ کی بیرون ممالک پی ایچ ڈی کیلئے سپلٹ پی ایچ ڈی سکالرشپ پروگرام کا آغاز کر دیا

by Asad Saleem | مئی 11, 2017 5:51 شام

لاہور (سٹاف رپورٹر): اعلیٰ تعلیمی اداروں کے فیکلٹی ممبرز کو ترقی یافتہ ممالک سے پی ایچ ڈی کرانے کے لئے پنجاب ہائرایجوکیشن کمیشن نے سپلٹ پی ایچ ڈی پروگرام کا آغاز کر دیا ہے۔ اس سلسلے میں ہائر ایجوکیشن کمیشن نے پائلٹ پراجیکٹ کا آغاز پنجاب یونیورسٹی انسٹی ٹیوٹ آف سوشل اینڈ کلچرل سٹڈیز کے ساتھ معاہدے کے تحت کر دیا ہے۔ اس سلسلے میں معاہدے پر دستخطوں کی تقریب وائس چانسلر آفس کے کمیٹی روم میں منعقد ہوئی جس میں پنجاب ہائر ایجوکیشن کمیشن کے چیئرمین پروفیسر ڈاکٹر نظام الدین، وائس چانسلر پنجاب یونیورسٹی پروفیسر ڈاکٹر ظفر معین ناصراور ڈین فیکلٹی آف بیہوریل اینڈ سوشل سائنسز پروفیسر ڈاکٹر ذکریا ذاکرنے شرکت کی۔ تقریب سے خطاب کرتے ہوئے ڈاکٹر نظام الدین نے کہا کہ پنجاب ہائر ایجوکیشن کمیشن پی ایچ ڈی اساتذہ کی تعداد کو بڑھانے کے لئے اقدامات کر رہا ہے۔ انہوں نے کہاکہ ابتدائی طور پر پنجاب ہائیر ایجوکیشن کمیشن پنجاب یونیورسٹی کے انسٹی ٹیوٹ آف سوشل اینڈ کلچرل سٹڈیز کے فیکلٹی ممبران کو بیرون ممالک پی ایچ ڈی کی تعلیم حاصل کرنے کے لئے 6 سکالرشپس فراہم کر رہا ہے۔ انہوں نے کہا کہ سپلٹ پی ایچ ڈی سکالرشپ پروگرام کا مقصد اساتذہ کو دنیا کے بہترین اعلیٰ تعلیمی اداروں میں تحقیق کے مواقع فراہم کرنا ہے۔ انہوں نے کہا کہ یہ پروگرام اساتذہ کی تخلیقی اور تحقیقی صلاحیتوں میں اضافے کے لئے کارآمد ثابت ہو گا۔ ڈاکٹر ظفر معین ناصر نے کہا کہ پنجاب ہائر ایجوکیشن کمیشن کا یہ اقدام اساتذہ کو دنیا کی بہترین یونیورسٹیوں سے پی ایچ ڈی حاصل کرنے کے لئے اہم موقع فراہم کرے گا۔ ڈاکٹر ذکریا ذاکر نے کہا کہ پی ایچ ڈی کرنے والے اساتذہ ایک سال پاکستان میں تعلیم حاصل کریں گے جبکہ دوسال بیرون ممالک کی اعلیٰ یونیورسٹیوں میں تعلیم حاصل کریں گے۔ انہوں نے کہا کہ اس پروگرام کے تحت بیرون ممالک سے سپروائزرز پاکستان بھی آسکیں گے جس سے پاکستانی محققین استفادہ کر سکیں گے۔

Comments

comments

Source URL: http://urdu.educationist.com.pk/?p=1469