پنجاب یونیورسٹی،کلچر ڈے حملے میں ملوث 17 طلباءمعطل

پنجاب یونیورسٹی،کلچر ڈے حملے میں ملوث 17 طلباءمعطل
اپریل 13 19:26 2017 Print This Article

پنجاب یونیورسٹی انتظامیہ کی  پہلے مرحلے میں ہنگامہ آرائی میں ملوث 17 طلباء کے خلاف کارروائی  ،
لاہور(سٹاف رپورٹر)؛ پنجاب یونیورسٹی انتظامیہ نے 21 مارچ کو ادارہ تعلیم و تحقیق کے باہر ہنگامہ آرائی کرنے والے طلباء کی نشاندہی کے بعد ان کے خلاف کارروائی کا باقاعدہ آغاز کر دیا ہے پنجاب یونیورسٹی کے ترجمان خرم شہزاد کے مطابق انکوائری کمیٹی کی سفارشات کی روشنی میں جن طلباء اور بیرونی عناصر کی نشاندہی کی گئی ہے ،

10 طالب علم معطل، چارج شیٹ جاری ، 7 خارج شدہ طلباء کے کوائف پولیس کو فراہم

پہلے مرحلے میں ان طلباء میں سے قواعد کی سنگین خلاف ورزی اور ہنگامہ آرائی میں ملوث 17 طلباء کے خلاف کارروائی کرتے ہوئے دس طلباء کومعطل کرتے ہوئے چارج شیٹ جاری کر دی ہے ۔ اور ان طلباء سے 7 روز میں جواب طلب کر لیا ہے۔ علاوہ ازیں واقعہ میں ملوث 7 خارج شدہ طلباء کے کوائف قانونی کارروائی کے لئے پولیس کو فراہم کر دئیے گئے ہیں۔ پنجاب یونیورسٹی کے ترجمان نے کہا ہے کہ انکوائری کمیٹی کی سفارشات پر عملدرآمد کیا جائے گا اور واقعے میں ملوث تمام طلباء کے خلاف مرحلہ وار انضباطی کارروائی کی جائے گی اور کیمپس میں پر امن ماحول کو ہر صورت قائم رکھا جائے گا۔ پنجا ب یونیورسٹی انتظامیہ نے21 مارچ کی ہنگامی آرائی میں ملوث ہونے پرجن طلباء کے خلاف کارروائی کی ہے ان میں انسٹی ٹیوٹ آف جیالوجی کے عبدالرحمن اور صائم اللہ، ہیلی کالج آف کامرس کے عثمان رنگ الہی، اسلامک سٹڈیز کے محمد عظیم قریشی، انسٹی ٹیوٹ آف بائیوکیمسٹری و بائیو ٹیکنالوجی کے ہدایت اللہ اور بہادر خان، شعبہ سپیس سائنس کے اسامہ بن شفاعت، شیخ زید اسلامک سنٹر کے عبدالبصیر اور نقیب اللہ اور یونیورسٹی لاء کالج کے ولید منصور شامل ہیں۔

اسلامی جمیعت طلباء نے انتظامیہ کے فیصلے کو یکطرفہ قراردیتے ہوئے کل بروز جمعہ  کو کیمپس پل پر احتجاج کا اعلان کردیا ۔

Comments

comments

  Categories: