10 ہزار ایجوکیٹرز کی تنخواہیں اس ماہ سے بند، یونائٹڈ ٹیچرز کونسل پنجاب کی احتجاجی کال

10 ہزار ایجوکیٹرز کی تنخواہیں اس ماہ سے بند، یونائٹڈ ٹیچرز کونسل پنجاب کی احتجاجی کال
اپریل 03 16:40 2017 Print This Article

دس ہزار ایجوکیٹرز کی تنخواہیں اس ماہ بند ہو جائیں گی حکومت پنجاب فی الفورضروری احکامات جاری کرے ۔ طارق محمود 

لاہور (سٹاف رپورٹر): تین سال کا کنٹریکٹ ختم ہونے پر  پنجاب کے 10 ہزار ایجوکیٹرز کی تنخواہیں رواں ماہ بند ہو جایئں گی، یونائٹڈ ٹیچرز کونسل پنجاب نے احتجاجی کال دیدی ہے۔  کونسل نے مستقبل کی حکمتِ عملی میڈیا کے سامنے پیش کردی کئی ہے ۔

یونائٹڈ ٹیچرز کونسل میں شامل اساتذہ تنظیموں کے مرکزی عہدداران جن میں محمد اجمل شاد صدر ایس ای ایس، رشید احمد بھٹی صدر ہیڈ ماسٹرز ایسوسی ایشن، اللہ رکھا گجر صدر پی ٹی یو ،محمد اسلم گجر صدر سکول ایجوکیشن سروس ، اللہ بخش قیصر صدرپی ٹی یو، محمد اشفاق نسیم صدر ایم سی ٹیچرز یونین ،حافظ عبدالناصر سابقہ صدر ایس ایس اے ، محمد اختر کنوینئیر یو ٹی سی لاہور، طارق محمود کنوینئیر یو ٹی سی پنجاب ، حافظ غلام محی الدین صدر مرکزیہ اور کاشف شہزادچوہد ری سیکرٹری جنرل پنجاب ٹیچرز یونین کے اجلاس کے بعد حکمتِ عملی پیش کی گئی۔

الائنس  کا کہنا ہے کہ  وہ ایجوکیٹرز جنہوں نے وزیر اعلی کے احکامات کی روشنی میں ریگولر ہونا تھا لیکن ضلعی تعلیمی افسران کی نااہلی کی وجہ سے انہیں ریگولر نہیں کیا گیا، ان کا تین سالہ کنٹریکٹ اپریل میں ختم ہو چکا  ان کی تنخواہیں اس ماہ بند ہو جائیں گی اور پنجاب بھر میں تقریباٌ دس ہزار ایجو کیٹرز کے گھرانوں میں معاشی ابتری ہو گی ۔ اساتذہ رہنماؤں نے مطالبہ کیا حکومت پنجاب فی الفور تنخواہوں کی ادائیگی کے لیے ضروری احکامات جاری کرے

بلا تفریق تمام اساتذہ کے سکیل اپ گریڈ کیے جائیں اور سرکاری سکولوں کی نجکاری بند کی جائے۔ یونائٹڈ ٹیچرز کونسل پنجاب

یونائٹڈ ٹیچرز کونسل پنجاب کے اجلاس  میں  19 اپریل 2017بروز بدھ کو اساتذہ کی احتجاجی ریلی،  مسجد شہدا تا دفتر وزیر اعلی پنجاب لاہور، کے انتظامات کو حتمی ترتیب  بھی دی گئی اور یہ اعلان کیا گیا کہ  20اپریل کے بعد پنجاب کے ہر ضلع کے ہر شہر میں روزانہ کی بنیاد پر اساتذہ،  طلباء وطالبات کے ہمراہ، احتجاجی مظاہروں کا انعقاد کریں گے ۔ اجلاس میں اس عزم کا اعائدہ کیا گیا کہ مطالبات کی حتمی منظوری تک احتجاجی تحریک جاری رہے گی کیونکہ اساتذہ کے مطالبات جائز ہیں۔

کونسل نے یہ مطالبہ بھی کیا کہ بلا تفریق تمام اساتذہ کے سکیل اپ گریڈ کیے جائیں اور سرکاری سکولوں کی نجکاری بند کی جائے۔

Comments

comments